کراچی۔۔۔26ستمبر2021ء

ایم کیو ایم پاکستان کے کنوینر ڈاکٹر خالد مقبول صدیقی نے سلسلہ ایام ہجرت کے آخری دن میڈیا نمائندگان سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ ہم مہاجر ہونے پر فخر محسوس کرتے ہیں ہم ایسی نسبت کو ایسی ہجرت سے جوڑتے ہیں جس سے مسلمانوں کی تقویم وابستہ ہیں ہمیں ساری نسبتیں اور ایک نئے جذبے کے ساتھ کام کرنا ہے ہمیں کسی سے حب الوطنی کا سرٹیفیکیٹ لینے کی ضرورت نہیں ہیہم ہی واحد سچے پاکستانی ہیں جن کے آباؤ اجداد نے لازوال قربانیاں دی ہیں۔ہمارے بزرگوں نے اس سرزمین پر قدم رکھا تو ہندستان سے پاکستان وجود میں آیا ڈاکٹر خالد مقبول نے مزید کہا کہ پاکستان بچانے کیلئے ہمارے آباؤ اجداد نے 20لاکھ سے زیادہ جانوں کی قربانیاں دی ہیں آج بھی ریڈ کراس میں ہمارے لوگ مقیم ہیں جنھوں نے پاکستان بنانے کیلئے اپنی جانوں کا نذرانہ پیش کیا لیکن ابھی تک بے یارو مددگار کیمپوں میں پریشان زندگیاں گزار رہے ہیں آج ہم ہجرت کے 3 ایام مکمل کر رہے ہیں لیکن اس کا تسلسل جاری رہے گا اپنی قومیت کا اظہار اور اپنے صوبے پر اقرار جاری رہے گاآج کی یہ شب اور ایام ہجرت کی گزری ہوئی شب آپ سب کو مبارک ہو۔