یہ کوئی معمولی بات نہیں کہ ایم کیو ایم سے لڑ نے کیلئے تمام منفی قوتو ں کو جمع ہو نا پڑا ہے وہ آپ کے طر ز سیا ست سے خو ف زدہ ہیں،خالدمقبول صدیقی

حا فظ نعیم الرحمن کا تہہ دل سے شکر گزار ہو ں کہ جو نعریں ایم کیو ایم 35بر س سے لگا رہی ہے انکو جما عت اسلامی نے گو د لے لیا ہے،خالد مقبول صدیقی

حیدر آباد میں 2اکتوبر کو ایک احتجاجی ریلی نکالی جائیگی جس کے بعد کراچی میں فیصلہ کن احتجاج کیا جائیگا کیا آپ لوگ تیار ہیں؟،خالد مقبول

رسول خداﷺ کے نصبت سے ایام ہجرت منائینگے اور 25,24اور26ستمبر کو ہم مہاجر قومیت کے تشخص کے طور پر ایام ہجر ت منا کر اپنے کلچر ڈے منانے کا آغاز کرینگے،خالد مقبول صدیقی

ایم کیو ایم پاکستان نے آنے والے بلد یاتی انتخا با ت کیلئے امید واروں سے درخو استیں طلب کر لی ہیں،سینئر ڈپٹی کنوینر عامر خان

ذمہ داران گھر وں سے نکلیں اور تحریک کیلئے نیا خو ن تحریک میں شامل کر یں اور اس سفر جد وجہد کو تیز کر یں،ڈپٹی کنوینر ورکن سندھ اسمبلی کنو ر نویدجمیل

ایم کیو ایم پاکستان کا مقابلہ اربوں کھڑبوں رو پے والی سیا سی جما عتو ں کے ساتھ تھا جو مصنو عی جما عتیں بنائی گئیں تھیں لو گو ں نے انکو مستر د کیا،ڈپٹی کنوینر وسیم اختر

تمام تر کو ششوں کے بعد بھی ایم کیو ایم کمز ور نہیں ہو ئی اگر یہ وقت کسی اور جما عت پر آتا تو اس کا نام ونشان مٹ جا تا،انچارج سی او سی فر قان اطیب
کر اچی۔۔۔19ستمبر 2021ء

ٖکنوینر ایم کیو ایم پاکستان ڈاکٹر خالد مقبول صدیقی نے کہاکہ زند گی جینے کیلئے زندگی کا ایک مقصد ہو نا چاہیے آج یہا ں جو کا رکنان جمع ہیں انکابڑا مقصد عوام کے حقوق کا تحفظ ہے شاید یہی وجہ ہے کہ ایم کیو ایم کے ساتھ بر اہ راست کو ئی مقابلہ کر نے کو تیار نہیں تمام دشمن کسی ہیلے بہانے اور سازشوں کے ذریعے ایم کیو ایم کو نقصان پہنچانے کی کو شش میں ہے اور آپ سے لڑ نے کیلئے تمام منفی قوتو ں کو جمع ہو نا پڑا ہے وہ آپ کے طر ز سیا ست سے خو ف زدہ ہیں اسی خو ف سے کنٹو نمنٹ کے الیکشن میں جری منٹرنگ کی گئی اس شرح سے ووٹرز میں اضا فہ نہیں ہو ا جتنے حلقے بڑھا دئیے گئے اور ایم کیو ایم پاکستان کو اعصاب شکن جنگ کیلئے تیار رہنا پڑیگا۔انہوں نے کہا کہ میں حا فظ نعیم الرحمن کا تہہ دل سے شکر گزار ہو ں کہ جو نعریں ایم کیو ایم جو 35بر س سے لگا رہی ہے انکو جما عت اسلامی نے گو د لے لیا ہے وہ الز ام لگا تیں ہیں کہ ایم کیو ایم میں کر منل آگئے ہیں تو پھر وہ ہمارے کا رکنان کو جما عت میں آنے کی دعوت کیو ں دے رہے ہیں کیا انکے پا س کر منل کم پڑ گئے ہیں اور ہم انکے اس با ت پر بھی شکر گزار ہیں کہ جماعت اسلامی نے تسلیم کیا کہ عوام نے ایم کیو ایم کو ووٹ دیئے جب قصبہ علیگڑ ھ کی بستی جل رہی تھی تو شہرکی کنجی آپ کے پا س تھی یہا ں کا مینڈیٹ آپ کے پا س تھا کو ئی ایسا سچ تو ہے جو ہما رے ساتھ ہے جس کے با عث ہم 40سال سے زند ہ ہے آج وہ وقت آگیا ہے فیصلہ کن جد وجہد کی تیاری کی جا ئے ہم نے کئی محا زوں پر کا میابیاں حا صل کی ہے اب فیصلہ کن مو ڑ پر ہیں آپ پرفیصلہ کن حملے بھی ہو نگے اور سازش بھی ہوگی لیکن ہمیں اپنا کام کر نا ہے اور انکو انکا کام کر نے دیں۔ان خیالا ت کا اظہا ر انہو ں نے ایم کیو ایم کے مر کز بہا در آبا د پر جنرل ورکر ز اجلا س سے خطاب کر تے ہو ئے کیا۔ ڈکٹر خالد مقبو ل صدیقی نے مز ید کہا کہ ا صولو ں کو ہا ر کے الیکشن نہیں جیتنا چاہتے بالکل اس طر ح الیکشن ہا ر کرحوصلیں نہیں ہا ر سکتے ہم ایک منظم جد وجہد کر رہے ہیں کیو ں کہ ہما ری سمت کا تعین ہو چکا ہے اور جن کی سمت کا تعین نہیں ہو تا وہ تنظیم نہیں بھیڑ کہلا تی ہے آج جو کا رکن حالا ت کے جبر سے لڑتے ہو ئے اپنے گھر میں بیٹھیں ہیں وہ بڑا کا رکن ہے اس واپس لیکر آنا ہے نظم وضبط اپنا راستہ بنانا ہے تعداد طا قت نہیں ہو تی صلا حیت اور وفا طا قت ہو تی ہے رابطہ کمیٹی نے یہ عزم کیا ہے کہ اب مید ان عمل میں اتریں گے ہر دروازے پر دستک دینگے ہم ایک محذب اور تہذیب یا فتہ ثقاوفت زبان کے وارث ہیں اور اسی طر ح گھر وں کے جا نے کے آداب اور دروازکھولنے کے بعدکے آداب بھی ہمیں معلوم ہو نا چاہیے ہمیں بتا نا ہے کہ ہم موجود بھی ہیں اور زند ہ بھی۔خالد مقبول صدیقی نے کہا کہ حیدر آباد میں 2اکتوبر کو ایک احتجاجی ریلی نکالی جائیگی جس کے بعد کراچی میں فیصلہ کن احتجاج کیا جائیگا کیا آپ لوگ تیار ہیں؟ ہم جس ثقافت اور مضبوط زبان کے وارث ہیں ہمیں بھی اپنا کلچر ڈے بنانہ چاہئے جس کے کیلئے ہمارا فیصلہ ہے کہ ہم رسول خداﷺ کے نصبت سے ایام ہجرت منائینگے اور 25,24اور26ستمبر کو ہم مہاجر قومیت کے تشخص کے طور پر ایام ہجر ت منا کر اپنے کلچر ڈے منانے کا آغاز کرینگے۔ سینئر ڈپٹی کنوینر عامر خان نے کہا کہ آج ہمیں اپنے آپ کو خو د احتسابی کے عمل سے گزرنا ہو گا کہ ہم اپنی ذمہ داریو ں کو پو را کر رہے ہیں یا نہیں کیو ں کہ احساس ذمہ داری بھی ہمیں کا رکن بنا تی ہے اور ہمیں یہ بھی سوچنا ہے ہم جس تنظیم سے جڑے ہیں اس کے منشور اس کے مقصد سے ہم آگا ہ یا نہیں ہیں لہٰذا ضروری ہے کہ ہم اپنے آپکو اپنی سوچ اور فکر کے ساتھ تنظیم کے ساتھ جوڑیں رکھیں ہمیں ان خطرات کا ادراک ہو نا چاہیے جو ہما رے ارد گر د ہیں ہمیں اپنے مقصد کا تعین کر نا ہو گا اور پھر اسے حا صل کر نے کی کو شش کر نی ہو گئی ہما را مقصد یہ ہو نا چاہیے کہ ہما ری قوم سر اٹھا کر جئے اور ہمیں ملک کی سیا ست کا نقشہ بدلنا ہو گا ہمیں تنظیم کو عوام سے منسلک کر نا ہے اس کیلئے ہمیں عوام کے دکھ،در د، غم اور خو شی میں شریک ہو نا پڑیگا ایم کیو ایم پاکستان نے آنے والے بلد یاتی انتخا با ت کیلئے امید واروں سے درخو استیں طلب کر لی گئیں ہیں۔ڈپٹی کنوینر ورکن سندھ اسمبلی کنو ر نویدجمیل نے کہاکہ آج ضرورت اس امر کی ہے کہ وہ ساتھی جو کسی بھی وجہ سے غیر فعال ہے انہیں واپس لایا جا ئے یو سی کے ذمہ دار ہو یا ٹا ؤن کے ان کا تعلق سی او سی سے ہو یا رابطہ کمیٹی سے وہ کا رکنان کے گھر جا ئے انہیں واپس تنظیم میں لا ئیں ذمہ داران کا رکنان کی ذمہ داری ہے کہ وہ عوام سے رابطہ میں رہے کا رنر میٹنگ کا سلسلہ دوبا رہ شروع کیا جا ئے ہما ری اساس عوام ہیں اور ان سے رابطہ کئے بغیر ایم کیو ایم کے دائرے کا ر کو وسیع نہیں کیا جا سکتا ایم کیو ایم عوام سے ہے اور عوام ایم کیو ایم کا خاصہ ہے ذمہ داران گھر وں سے نکلیں اور تحریک کیلئے نیا خو ن تحریک میں شامل کر یں اور اس سفر اور جد وجہد کو تیز کر یں اورما ضی کی غلطیو ں کا ازالہ اس وقت ممکن ہے کہ ہم اپنی غلطیو ں سے سیکھیں اور آئند ہ اس قسم کی غلطیو ں سے بچنے کی حکمت عملی تر تیب دیں بلد یا تی اور عام انتخابا ت ہو نے کو ہیں اسکی بھر پو ر تیا ری کی جا ئے۔ڈپٹی کنوینر وسیم اختر نے کہا کہ جن حالا ت مشکلا ت میں کام کر رہے ہیں وہ قابل تحسین ہے پو ری دنیا میں آئین وقانون ہے کہ امید وارکوفری ہینڈ کام کر نے کی اجا زت ہو تی ہے مگر یہا ں ایسا نہیں ہو تا کنٹو نمنٹ بو رڈ کے الیکشن میں ہما رے ساتھ دھا ند لی کی گئی ہما را مقابلہ اربوں کھربوں رو پے والی سیا سی جما عتو ں کے ساتھ تھا یہ جو مصنو عی جما عتیں بنائی گئیں تھیں لو گو ں نے انکو مستر د کیا کر اچی،حید رآبا د میر پو ر خا ص،سکھر کے لو گ کل بھی ایم کیو ایم کے ساتھ تھے اور آج بھی ایم کیو ایم کے ساتھ ہیں۔ سی او سی انچارج فر قان اطیب نے کہاکہ کنٹو نمنٹ الیکشن کے ذریعے یہ تا ثر دیا جا رہا ہے کہ ایم کیو ایم پاکستان ختم ہو گئی ہے دشمن کی سازش ہے کہ ان حربو ں کے ذریعے جنرل الیکشن میں ایم کیو ایم کے ساتھ کی جا نے والی سازش کو کا میاب بنا سکیں لیکن ہم نے اور آپ نے ملکر اس سازش کو نا کام بنا نا ہے اور عوام کو اس سازش سے آگا ہ کر نا ہے کا رکنان کی محبت اور لگن سے کام کر نے پر شاباش اور اب زیا دہ محنت کر نا ہو گی سندھ کے شہر ی علا قوں کے ساتھ ذیا تیاں ہو رہی ہیں علم میں لا نا ہے تمام تر کو ششیں کے بعد بھی ایم کیو ایم کمز ور نہیں ہو ئی اگر یہ وقت کسی اور جما عت پر آتا تو اس کا نام ونشان مٹ جا تا۔